ویب سائٹ دفتر رہبر معظم انقلاب اسلامی

طبیب کے کہنے پر روزہ نہ رکھنا اور کشف خلاف ہونا

س:  اگر ڈاکٹر مریض سے کہے کہ روزہ اس کے لئے مضر ہے اور وہ بھی روزہ نہ رکھے, لیکن چند سال کے بعد معلوم ہوجائے کہ روزہ اس کے لئے مضر نہیں تھااور ڈاکٹر نے اپنی تشخیص میں اشتباہ کیا ہے, کیا اس پر قضا اور کفارہ واجب ہے؟
ج: اگر حاذق اور امین ڈاکٹر کے کہنے سے یا کسی اور معقول وجہ سے ضرر کا ڈر حاصل ہوجائے جسکی وجہ سے روزہ نہ رکھے, تو فقط قضا اس پر واجب ہے.
 
700 /