ویب سائٹ دفتر رہبر معظم انقلاب اسلامی

بڑے شہروں کے بارے میں مرجع تقلید کے فتوی کا علم نہ ہونا

س: ايک شخص کوامام خميني(رہ)  کے اس فتوے کى اطلاع نہيں تھى کہ تہران بڑے شہروں ميں سے ہے ، انقلاب کے بعد اسے امام خمينى کے فتوے کا علم ہواہے، لہذا اس کے ان روزوں اور نمازوں کا کيا حکم ہے جو عادى طريقہ سے اس نے انجام ديئے ہيں؟
ج: اگر ابھى تک وہ اس مسئلہ ميں امام خمينى کى تقليد پر باقى ہے تو اس پر ان گزشتہ اعمال کا تدارک واجب ہے جو امام خميني(رہ) کے فتوے کے مطابق نہ ہوں، چنانچہ جو نمازيں ا س نے قصر کى جگہ پورى پڑھى تھيں ان کو قصر کى صورت ميں بجا لائے اور ان روزوں کى قضا کرے جو اس نے مسافرت کى حالت ميں رکھے تھے۔
 
700 /