ویب سائٹ دفتر رہبر معظم انقلاب اسلامی
دریافت:

استفتاآت کے جوابات

  • تقلید
    • احتیاط، اجتہاد اور تقلید
    • تقلید کے شرائط
    • اجتھاد و اعلمیت کااثبات اور فتویٰ حاصل کرنے کے طریقے
    • تقلید بدلنا
    • میت کی تقلیدپر باقی رھنا
      پرنٹ  ;  PDF
       
      میت کی تقلید پر باقی رہنا
       
      س٣٣: ایک شخص نے امام خمینی کی وفات کے بعد کسی مجتہد کی تقلید کی اور اب وہ دوبارہ امام خمینی کی تقلید کرنا چاہتاہے ، کیا ایسا کرسکتاہے؟
      ج: زندہ جامع الشرائط مجتہد کی تقلید سے مردہ مجتہد کی تقلید کی طرف رجوع کرنا بنابر احتیاط ، جائز نہیں ہے ، ہاں اگر عدول کے وقت وہ زندہ مجتہد، جامع الشرائط نہیں تھا تو اس کی طرف عدول شروع سے ہی باطل تھا لذا اب اسے اختیار ہے کہ امام خمینی کی تقلید پر باقی رہے یا ایسے زندہ مجتہد کی طرف عدول کرلے جس کی تقلید جائز ہے۔
       
      س٣٤: میں اما م خمینی کی حیات میں ہی بالغ ہوگیا تھا اور بعض احکام میں ان کی تقلید کرتا تھا، لیکن مسئلہ تقلید میرے لئے زیادہ واضح نہیں تھا، اب میری ذمہ داری کیا ہے ؟
      ج: اگر آپ امام خمینی کی زندگی میں اپنے عبادی اور غیر عبادی اعمال میں ان کے فتاویٰ کے مطابق عمل کرتے رہے اور عملاً انہیں کے مقلد تھے اگر چہ بعض احکام میں ہی تو آپ کے لئے تمام مسائل میں ان کی تقلید پر باقی رہنا جائز ہے۔
       
      س٣٥: اگر مردہ مجتہد اعلم ہو تو اس کی تقلید پر باقی رہنے کا حکم کیا ہے ؟
      ج: مردہ مجتہد کی تقلید پر باقی رہنا ہر حال میں جائز ہے لیکن سزاوار یہ ہے کہ میت کے اعلم ہونے کی صورت میں احتیاطاً اسی کی تقلید پر باقی رہا جائے۔
       
      س٣٦: کیا مردہ مجتہد کی تقلید پر باقی رہنے کے لئے اعلم سے اجازت لینا ضروری ہے یا کسی بھی مجتہد سے اجازت لی جاسکتی ہے ؟
      ج: اگر تقلید میت پر باقی رہنے کے جواز کے سلسلے میں سب فقہا کا اتفاق ہو تو اعلم سے اجازت لینا ضروری نہیں ہے ۔
       
      س٣٧: ایک شخص نے امام خمینی کی تقلید کی تھی اور ان کی وفات کے بعد اس نے بعض مسائل میں ایک دوسرے مجتہد کی تقلید کرلی ، پھر اس مجتہد کا انتقال ہوگیا، اب اس شخص کا فریضہ کیا ہے ؟
      ج: جن مسائل میں اس نے امام خمینی کی تقلید سے عدول نہیں کیا تھا ان میں امام کی تقلید پر باقی رہ سکتاہے اور جن مسائل میں اس نے دوسرے مجتہد کی طرف عدول کرلیا تھا، ان میں اسے اختیار ہے کہ اسی کی تقلید پر باقی رہے یا زندہ مجتہد کی طرف رجوع کرلے۔
       
      س٣٨: امام خمینی کے انتقال کے بعد میرا خیال یہ تھا کہ ان کے فتویٰ کے مطابق میت کی تقلید پر باقی رہنا جائز نہیں ہے لہذا میں نے زندہ مجتہد کی تقلید کرلی، کیا اب دوبارہ میرے لئے امام خمینی کی تقلید کی طرف رجوع کرنا جائز ہے؟
      ج: جن مسائل میں آپ امام خمینی کی تقلید سے زندہ مجتہد کی طرف عدول کرچکے ہیں بنا بر احتیاط ان میں امام خمینی کی طرف رجوع کرنا جائز نہیں ہے مگر یہ کہ زندہ مجتہد کا فتویٰ یہ ہو کہ مردہ مجتہد اعلم ہو تو اس کی تقلید پر باقی رہنا واجب ہے اور آپ کے نزدیک امام خمینی ، زندہ مجتہد کی بہ نسبت اعلم ہوں تو ایسی صورت میں آپ پر امام خمینی کی تقلید پر باقی رہنا واجب ہے ۔
       
      س٣٩: کیا میرے لئے کسی مسئلہ میں کبھی مجتہدِ میت اور کبھی زندہ اعلم مجتہد کی طرف رجوع کرنا جائز ہے ، جبکہ اس مسئلہ میں دونوں کا فتویٰ مختلف ہو؟
      ج: جب تک زندہ مجتہد کی طرف عدول نہ کیا ہو میت کی تقلید پر باقی رہنا جائز ہے ، لیکن میت سے زندہ مجتہد کی طرف عدول کرلینے کے بعد بنابر احتیاط دوبارہ میت کی طرف رجوع کرنا جائز نہیں ہے ۔
       
      س٤٠: کیا امام خمینی کے مقلدین اور ان لوگوں کے لئے جو ان کی تقلید پر باقی رہنا چاہتے ہیں ، زندہ مراجع میں سے کسی ایک سے اجازت لینا ضروری ہے یا اس مسئلے میں اکثر مراجع عظام و علمائے اعلام کا تقلید میت پر باقی رہنے کے جواز پر اتفاق ہی کافی ہے ؟
      ج: اگرمردہ مجتہد کی تقلید پر باقی رہنے کے جواز پر علماء کا اتفاق ہو تو اس کی بناپر امام خمینی کی تقلید پر باقی رہنا جائز ہے اور اس سلسلہ میں کسی خاص مجتہد کی طرف رجوع کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔
       
      س٤١: جس مسئلہ پر مقلد نے مردہ مجتہد کی حیات میں عمل کیا تھا یا نہیں کیا تھا اس میں میت کی تقلید پرباقی رہنے کے بارے میں آپ کی رائے کیا ہے ؟
      ج: تمام مسائل میں میت کی تقلید پر باقی رہنا جائز اور کافی ہے چاہے مرجع کی حیات میں ان پر عمل کیا ہو یا نہ ۔
       
      س٤٢: بنابر ایں کہ میت کی تقلید پر باقی رہنا جائز ہے کیا وہ لوگ بھی میت کی تقلید پر باقی رہ سکتے ہیں جو مجتہد کی حیات میں بالغ نہیں ہوئے تھے مگر اسکے فتوؤں پر عمل کرتے تھے؟
      ج: اگر نابالغ نے جامع الشرائط مجتہد کی صحیح طریقے سے تقلید کی ہو تو اس مجتہد کے فوت ہوجانے کے بعد اسکی تقلید پر باقی رہنا جائز ہے۔
       
      س٤٣: ہم امام خمینی کے مقلد ہیں اور ان کی وفات کے بعد بھی ان کی تقلید پر باقی ہیں لیکن اب جبکہ ملت مسلمہ کو عالمی استکبار کا سامنا ہے ہمیں نئے نئے شرعی مسائل در پیش ہوتے ہیں ایسے میں آپ کی طرف رجوع کرنے کی ضرورت محسوس کرتے ہیں ، لہذا ہم آپ کی تقلید کرنا ضروری سمجھتے ہیں کیا ایسا کرسکتے ہیں؟
      ج: آپ کے لئے امام خمینی (طاب ثراہ) کی تقلید پر باقی رہنا جائز ہے فی الحال ان کی تقلید سے عدول کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے اور اگر بعض نئے مسائل میں حکم شرعی معلوم کرنے کی ضرورت پیش آئے تو ہمارے دفتر سے خط و کتابت کرکے معلوم کرسکتے ہیں۔
       
      س٤٤: اس مقلد کا فریضہ کیا ہے جو ایک مجتہد کی تقلید میں ہو اور اس کے لئے دوسرے مرجع کی اعلمیت ثابت ہوجائے؟
      ج: احتیاط کی بنا پر واجب ہے کہ جن مسائل میں اسکے مرجع کے فتاویٰ اعلم مرجع کے فتاویٰ سے مختلف ہیں ان میں اعلم کی طرف عدول کرے۔
       
      س٤٥:
      ١۔ کس صورت میں مقلد اپنے مرجع سے عدول کرسکتاہے؟
      ٢۔ اگر اعلم کے فتاویٰ زمانہ کے مطابق نہ ہوں یا ان پر عمل بہت دشوار ہو تو کیا غیر اعلم کی طرف رجوع کیا جاسکتاہے؟
      ج:
      1. بنابر احوط زندہ مرجع تقلید سے دوسرے مجتہد کی طرف عدول کرنا جائز نہیں ہے ہاں اگر دوسرا مرجع اس پہلے مرجع سے اعلم ہو اور کسی مسئلہ میں اس کا فتویٰ پہلے مرجع کے فتویٰ کے مخالف ہو تو کرسکتاہے۔
      2. صرف اس گمان کی وجہ سے کہ اسکے مرجع تقلید کے فتاویٰ زمانہ اور اس کے تقاضوں کے مطابق نہیں ہیں یا فقط اس وجہ سے کہ اس کے فتاویٰ پر عمل دشوار ہے ، اعلم سے کسی دوسرے مجتہد کی طرف عدول کرنا جائز نہیں ہے ۔
    • تقلید کے متفرقہ مسائل
    • مرجعیت و راہبری
    • ولایت فقیہ اور حکم حاکم
  • طہا رت
  • احکام نماز
  • احکام روزہ
  • کتاب خمس
  • جہاد
  • امر بالمعروف و نہی عن المنکر
  • حرام معاملات
  • شطرنج اور آلات قمار
  • موسیقی اور غنا
  • رقص
  • تالی بجانا
  • نامحرم کی تصویر اور فلم
  • ڈش ا نٹینا
  • تھیٹر اور سینما
  • مصوری اور مجسمہ سازی
  • جادو، شعبدہ بازی اور روح و جن کا حاضر کرنا
  • قسمت آزمائی
  • رشوت
  • طبی مسائل
  • تعلیم و تعلم اور ان کے آداب
  • حقِ طباعت ، تالیف اور ہنر
  • غیر مسلموں کے ساتھ تجارت
  • ظالم حکومت میں کام کرنا
  • لباس کے احکام
  • مغربی ثقافت کی پیروی
  • جاسوسی، چغلخوری اور اسرار کا فاش کرنا
  • سگریٹ نوشی اور نشہ آور اشیاء کا استعمال
  • داڑھی مونڈنا
  • محفل گناہ میں شرکت کرنا
  • دعا لکھنا اور استخارہ
  • دینی رسومات کا احیاء
  • ذخیرہ اندوزی اور اسراف
  • تجارت و معاملات
  • سود کے احکام
  • حقِ شفعہ
  • اجارہ
  • ضمانت
  • رہن
  • شراکت
  • دین و قرض
  • صلح
  • وکالت
  • صدقہ
  • عاریہ اور ودیعہ
  • وصیّت
  • غصب
  • بالغ ہونے کے علائم اور حَجر
  • مضاربہ
  • بینک
  • بیمہ (انشورنس)
  • سرکاری اموال
  • وقف
  • قبرستان کے احکام
700 /