ویب سائٹ دفتر رہبر معظم انقلاب اسلامی
دریافت:

استفتاآت کے جوابات

  • تقلید
  • طہا رت
    • پانی کے احکام
    • بیت الخلاء کے احکام
    • وضو کے احکام
    • اسمائے باری تعالیٰ اور آیات الہی کو مس کرنا
    • غسل جنابت کے احکام
      پرنٹ  ;  PDF
       
      غسل جنابت کے احکام
       
      س ١٦۷: کیا وقت کے تنگ ہونے کی صورت میں مجنب شخص تیمم کرکے نجس بدن اور لباس کے ساتھ نماز پڑھ سکتاہے یا نہیں بلکہ ضروری ہے کہ بدن اور لباس کو پاک کرے اور غسل کرے اور پھر نماز کی قضا بجالائے؟
      ج: اگر وقت اس قدر تنگ ہو کہ اپنے بدن اور لباس کو پاک نہیں کرسکتا یا لباس کو تبدیل نہیں کرسکتا اور سردی و غیرہ کی وجہ سے برہنہ بھی نماز نہیں پڑھ سکتا تو ضروری ہے کہ غسل جنابت کے بدلے میں تیمم کرکے اسی نجس لباس کے ساتھ نماز پڑھے اور یہ نماز کافی ہے اور بعد میں اسکی قضا واجب نہیں ہوگی۔
       
      س ١٦۸: اگر دخول کے بغیر منی رحم میں پہنچ جائے تو کیا اس سے عورت مجنبہوجاتی ہے ؟
      ج: اس صورت میں جنابت صادق نہیں آتی۔
       
      س ١٦۹: کیا طبی آلات کے ذریعے اندرونی معائنہ کے بعد عورت پر غسل جنابت واجب ہے ؟
      ج: جب تک منی خارج نہ ہو غسل واجب نہیں ہے۔
       
      س ١۷۰: اگر حشفہ(ختنہ گاہ) کی مقدار تک دخول ہو لیکن منی خارج نہ ہو اور عورت بھی لذت کے آخری مرحلے تک نہ پہنچے تو کیا غسل جنابت صرف عورت پر واجب ہے یا صرف مرد پر یا دونوں پر ؟
      ج: دخول کی صورت میں اگر چہ حشفہ کی مقدا ر ہی ہو دونوں پر غسل واجب ہوجاتاہے ۔
       
      س ١٧۱: کس صورت میں عورت پر احتلام کی وجہ سے غسل جنابت واجب ہوتاہے ؟ اپنے شوہر کے ساتھ خوش فعلی کے وقت جو رطوبت عورت سے خارج ہوتی ہے کیا وہ منی کے حکم میں ہے ؟ کیا بغیراسکے کہ عورت کا بدن سست ہو اور وہ لذت کے انتہائی مرحلے تک پہنچے اس پر غسل واجب ہوجاتاہے ؟ بطور کلی مباشرت کے بغیر عورت کیسے مجنب ہوتی ہے ؟
      ج: اگرعورت لذت کے آخری مرحلے تک پہنچ جائے اور اسی حالت میں اس سے کوئی رطوبت خارج ہوجائے تو وہ مجنب ہوجائے گی اور اس پر غسل واجب ہوگا لیکن اگر اسے شک ہو کہ لذت کے آخری مرحلے تک پہنچی ہے یا نہیں یا شک ہو کہ کوئی رطوبت خارج ہوئی ہے یا نہیں تو غسل واجب نہیں ہے ۔
       
      س ١٧۲: کیا شہوت انگیز ڈائجسٹ و غیرہ کا پڑھنا اور فلموں کا دیکھنا جائز ہے؟
      ج: جائز نہیں ہے ۔
       
      س ١٧۳: اگر شوہر کے ساتھ مباشرت کے فوراً بعد عورت غسل کرلے جبکہ ابھی تک منی اسکے رحم میں باقی ہو اور غسل کے بعد منی اسکے رحم سے خارج ہوجائے تو کیا اس کا غسل صحیح ہے ؟ کیا یہ منی پاک ہے یا نجس؟ نیز کیا اس سے عورت دوبارہ مجنب ہوجائے گی یا نہیں ؟
      ج: اس کا غسل صحیح ہے اور غسل کے بعد جو رطوبت خارج ہوتی ہے اگر وہ منی ہو تو نجس ہے لیکن اگر مرد کی منی ہو تو عورت اس سے دوبارہ مجنب نہیں ہوگی۔
       
      س ١٧۴: کچھ عرصے سے میں غسل جنابت کے سلسلے میں شک میں مبتلا ہوں یہاں تک کہ اپنی بیوی سے مباشرت بھی نہیں کرتا اسکے باوجود غیر ارادی طور پر میرے اوپر ایسی حالت طاری ہوتی ہے کہ گمان کرتاہوں مجھ پر غسل جنابت واجب ہوگیا ہے اور ہر دن میں دو تین دفعہ غسل کرتاہوں اس شک نے مجھے پریشان کردیا ہے، میری ذمہ داری کیا ہے ؟
      ج: اگر جنابت میں شک ہو تو جنابت کے احکام مرتب نہیں ہوتے مگر یہ کہ اس طرح رطوبت خارج ہو کہ اس میں منی خارج ہونے کی شرعی علامات پائی جائیں یا آپ کو منی خارج ہونے کا یقین ہوجائے۔
       
      س ١٧۵: کیا حیض کی حالت میں غسل جنابت صحیح ہے اس طرح کہ اس سے مجنب عورت کی شرعی ذمہ داری ساقط ہوجائے؟
      ج: مذکورہ صورت میں غسل کا صحیح ہونا محل اشکال ہے ۔
       
      س ١٧۶: اگر عورت حیض کی حالت میں مجنب یا جنابت کی حالت میں حائض ہوجائے تو کیا حیض سے پاک ہونے کے بعد اس پر دو غسل واجب ہوں گے یا نہیں بلکہ حیض کی حالت میں جنابت طاری ہونے سے غسل جنابت واجب نہیں ہوتا کیونکہ وہ جنابت کے وقت پاک ہی نہیں تھی؟
      ج: دونوں صورتوں میںغسل حیض کے علاوہ غسل جنابت بھی واجب ہے لیکن مقام عمل میں صرف غسل جنابت پر اکتفا کرنا جائز ہے لیکن احوط یہ ہے کہ دونوں غسلوں کی نیت کرے ۔
       
      س ١٧۷: کس صورت میں مرد سے خارج ہونے والی رطوبت پر منی ہونے کا حکم لگایا جاسکتاہے ؟
      ج: جب شہوت کے ساتھ نکلے ، بدن میں سستی آجائے اور اچھل کر نکلے تو اس پر منی کا حکم لگے گا۔
       
      س ١٧۸: بعض موقعوں پر غسل کے بعد ہاتھ یا پیر کے ناخن کے اطراف میں چونے یا صابن کا اثر دکھائی دیتاہے جو غسل کے دوران حمام میں نظر نہیں آتا لیکن حمام سے نکلنے اور دقت کرنے کے بعد انکی سفیدی نظر آتی ہے ، اس کا حکم کیا ہے ؟ جبکہ بعض افراد غسل اور وضو کے وقت اس مسئلہ سے بے خبر ہوتے ہیں یا اس کی طرف توجہ نہیں رکھتے اور چونے یا صابن کا اثر موجود ہونے کی صورت میں اس کے نیچے پانی کے پہنچنے کا یقین نہیں ہوتا؟
      ج: صرف صابن یا چونے کے اثر کا موجود ہونا کہ جو اعضاء کے خشک ہونے کے بعد دکھائی دے، وضو یا غسل کو باطل نہیں کرتا مگر یہ کہ اسکی ایسی تہ ہو جو جلد تک پانی پہنچنے میں رکاوٹ بنے۔
       
      س ١٧۹: ایک برادر کا کہنا ہے کہ غسل سے پہلے بدن کا نجاست سے پاک ہونا واجب ہے اور اگر منی وغیرہ سے اسکی تطہیر غسل کے دوران میں ہو تو غسل کے باطل ہونے کا موجب ہے ، پس اگر ان کی بات صحیح ہے تو کیا میری گزشتہ نمازیں باطل ہیں اور ان کی قضا واجب ہے ؟ واضح رہے کہ میں اس مسئلہ سے بے خبر تھا؟
      ج: غسل جنابت سے پہلے پورے بدن کا پاک ہونا واجب نہیں ہے بلکہ ہر عضو کا اسکے غسل سے پہلے پاک ہونا کافی ہے اور اس صورت میں غسل اور اس سے پڑھی گئی نماز، دونوں صحیح ہیں اور اگر نجس عضو کو اسکے غسل سے پہلے پاک نہ کیا جائے اور ایک ہی دھونے کے ذریعے چاہے یہ عضو پاک بھی ہوجائے اور اس کا غسل بھی انجام پاجائے تو غسل باطل ہے اور اس غسل سے پڑھی گئی نماز بھی باطل ہے اور اسکی قضا واجب ہے ۔
       
      س ١۸۰: نیند کی حالت میں انسان سے جو رطوبت خارج ہوتی ہے ، کیا وہ منی کے حکم میں ہے ؟ جبکہ اس میں تینوں علامتیں ( اچھل کر نکلنا، شہوت کے ساتھ نکلنا اور بدن کا سست ہونا ) موجود نہ ہوں اور انسان کو پتا بھی بیدار ہونے کے بعد چلے کہ اس کے لباس پر رطوبت موجود ہے ؟
      ج: اگر ان تین علامتوں میں سے کوئی بھی موجود نہ ہو یا اسکے وجود میں شک ہو تو اس کا منی والا حکم نہیں ہے مگر یہ کہ کسی اور طریقے سے اسکے منی ہونے کا یقین ہوجائے۔
       
      س١٨۱: میں جوان ہوں اورایک مفلس گھرانے میں زندگی بسر کرتا ہوں، مجھ سے کثرت سے منی خارج ہوتی ہے اورحمام جانے کے لئے والد سے پیسہ مانگتے ہوئے شرم محسوس ہوتی ہے، گھر میں بھی حمام نہیں ہے۔ اس سلسلے میں میری رہنمائی فرمائیں؟
      ج: شرعی امور کی انجام دہی میں شرم کرنے کا کوئی معنی نہیں ہے اور واجب کو ترک کرنے کے لئے شرم و حیا، شرعی عذر نہیں بن سکتے۔ بہر حال اگر آپ کے لئے غسل جنابت ممکن نہیں ہے تو نماز اور روزہ کے لئے آپ کا فریضہ یہ ہے کہ غسل کے بدلے تیمم کریں۔
       
      س١٨۲: میرے لئے ایک مشکل ہے اور وہ یہ کہ اگر میرے بدن پر پانی کا ایک قطرہ بھی پڑجائے تو وہ نقصان دہ ہے، بلکہ مسح کرنے کا بھی یہی حال ہے اور بدن کا تھوڑا سا حصہ دھونے سے میرے دل کی دھڑکن بڑھ جاتی ہے، اس کے علاوہ دوسری تکلیفیں بھی شروع ہو جاتی ہیں تو کیا اس صورت میں میرے لئے اپنی بیوی سے مباشرت کرنا جائز ہے؟ اور کیا یہ ممکن ہے کہ چند ماہ تک میں غسل کے عوض تیمم کر کے نماز ادا کروں اور مسجد میں داخل ہواکروں؟
      ج: آپ پر بیوی سے مباشرت ترک کرنا واجب نہیں ہے بلکہ مجنب ہونے کی صورت میں اگر آپ غسل سے معذور ہوں تو ان اعمال کے لئے، جن میں طہارت شرط ہے غسل کے بدلے تیمم کرنا، آپ کا شرعی فریضہ ہے اور تیمم کے ساتھ مسجد میں داخل ہونے، نماز پڑھنے، قرآن کے حروف کو چھونے اور ان اعمال کے بجا لانے میں کوئی حرج نہیں ہے، جن میں جنابت سے پاک ہونا شرط ہے۔
       
      س ١٨۳: واجب یا مستحب غسل کے وقت قبلہ رخ ہونا واجب ہے یا نہیں؟
      ج: غسل کے وقت قبلہ رخ ہونا واجب نہیں ہے۔
       
      س ١٨۴: کیا حدث اکبر کے غسالہ (دھوون) سے غسل صحیح ہے جبکہ یہ معلوم ہو کہ غسل، قلیل پانی سے کیا گیاتھا اور بدن غسل سے پہلے پاک تھا؟
      ج: مذکورہ صورت میں اس سے غسل کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے۔
       
      س ١٨۵: اگر غسل جنابت کے درمیان حدث اصغر صادر ہوجائے تو کیا اس پر از سر نو غسل واجب ہے یا غسل مکمل کرنے کے بعد وہ وضو کرے گا؟
      ج: از سر نو غسل کرنا واجب نہیں ہے اور حدث اصغر کا غسل کی صحت پرکوئی اثر نہیں پڑتا لیکن یہ غسل اس کی نماز اور ان اعمال کے لئے وضو سے کافی نہیں ہے جن میں حدث اصغر سے طہارت شرط ہے۔
       
      س١٨۶: وہ گاڑھی رطوبت جو منی سے مشابہ ہوتی ہے اور پیشاب کے بعد شہوت و ارادہ کے بغیر خارج ہوتی ہے، کیا وہ منی کے حکم میں ہے؟
      ج: منی کے حکم میں نہیں ہے مگر یہ کہ اس کے منی ہونے کا یقین ہو جائے، یا نکلتے وقت اس میں منی ہونے کی شرعی علامات موجود ہوں۔
       
      س ١٨۷: جس کے ذمے کئی مستحب یا واجب غسل ہوں تو کیا ایک ہی غسل بقیہ کے لئے کافی ہوگا؟
      ج: اگرسب کی نیت سے ایک غسل بجالائے تو وہ سب کیلئے کافی ہے۔ اور اگر ان میں غسل جنابت بھی ہو اور اسی کا قصد کیا جائے تو وہ بقیہ غسلوں کیلئے کافی ہوگا، اگر چہ احتیاط یہ ہے کہ ان سب کی نیت کرے۔
       
      س ١٨۸: غسل جنابت کے علاوہ کیا دیگرغسل بھی وضو سے کفایت کرتے ہیں؟
      ج: کفایت نہیں کرتے۔
       
      س ١٨۹: آپ کی نظر میں غسل جنابت میں کیا پانی کا بدن پر جاری ہونا شرط ہے؟
      ج: معیار یہ ہے کہ اس پر غسل کے قصد سے بدن کا دھونا صادق آ جائے، پانی کا جاری ہونا شرط نہیں ہے۔
       
      س ١۹۰: اگر انسان جانتا ہو کہ اگر وہ اپنی زوجہ سے مباشرت کر کے خود کو مجنب کر دے تو اسے غسل کے لئے پانی نہیں ملے گا یا غسل اور نماز کے لئے وقت نہیں رہے گا، تو کیا اس کے لئے اپنی زوجہ سے مباشرت کرنا جائز ہے؟
      ج: اگر غسل سے عاجز ہونے کی صورت میں تیمم کرنے پر قادر ہو تو اپنی بیوی سے مباشرت کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے۔
       
      س ١٩۱: کیا غسل جنابت میں یہ ترتیب کافی ہے کہ پہلے سر دھوئیں اور اس کے بعد جسم کے باقی اعضاء کو، یا یہ کہ جسم کی دونوں اطراف میں بھی ترتیب ضروری ہے؟
      ج: بنابر احتیاط واجب دونوں اطراف کے درمیان ترتیب ضروری ہے اور یہ کہ پہلے جسم کا دایاں حصہ دھوئے پھر بایاں حصہ۔
       
      س ١٩۲: غسل ترتیبی کرتے وقت اگر میں پہلے پیٹھ دھو لوں اور اس کے بعد غسل ترتیبی کی نیت کر کے غسل بجا لاؤں توکیا اس میں کوئی حرج ہے؟
      ج: غسل کی نیت اور غسل شروع کرنے سے پہلے پیٹھ یا اعضائے بدن میں سے کسی عضو کے دھونے میں کوئی حرج نہیں ہے اور غسل ترتیبی کی کیفیت یہ ہے کہ بدن کو پاک کرنے کے بعد غسل کی نیت کرے، پھر پہلے سرو گردن کو دھوئے، اس کے بعد بنا بر احتیاط واجب بدن کا دایاں پھرا سی طرح بایاں حصہ دھوئے ۔
       
      س ١٩۳: کیا عورت پر غسل میں تمام بالوں کا دھونا واجب ہے؟ اور اگر غسل میں تمام بالوں تک پانی نہ پہنچے تو کیا غسل باطل ہے؟ جبکہ یہ معلوم ہو کہ سر کی تمام جلد تک پانی پہنچ چکا ہے؟
      ج: احتیاط واجب یہ ہے کہ تمام بالوں کو دھوئے۔
    • باطل غسل پر مترتب ہونے والے احکام
    • تیمّم کے احکام
    • عورتوں کے احکام
    • میت کے احکام
    • نجاسات کے احکام
    • نشہ آور چیزیں
    • وسوسہ اور اس کا علاج
    • کافر کے احکام
  • احکام نماز
  • احکام روزہ
  • کتاب خمس
  • جہاد
  • امر بالمعروف و نہی عن المنکر
  • حرام معاملات
  • شطرنج اور آلات قمار
  • موسیقی اور غنا
  • رقص
  • تالی بجانا
  • نامحرم کی تصویر اور فلم
  • ڈش ا نٹینا
  • تھیٹر اور سینما
  • مصوری اور مجسمہ سازی
  • جادو، شعبدہ بازی اور روح و جن کا حاضر کرنا
  • قسمت آزمائی
  • رشوت
  • طبی مسائل
  • تعلیم و تعلم اور ان کے آداب
  • حقِ طباعت ، تالیف اور ہنر
  • غیر مسلموں کے ساتھ تجارت
  • ظالم حکومت میں کام کرنا
  • لباس کے احکام
  • مغربی ثقافت کی پیروی
  • جاسوسی، چغلخوری اور اسرار کا فاش کرنا
  • سگریٹ نوشی اور نشہ آور اشیاء کا استعمال
  • داڑھی مونڈنا
  • محفل گناہ میں شرکت کرنا
  • دعا لکھنا اور استخارہ
  • دینی رسومات کا احیاء
  • ذخیرہ اندوزی اور اسراف
  • تجارت و معاملات
  • سود کے احکام
  • حقِ شفعہ
  • اجارہ
  • ضمانت
  • رہن
  • شراکت
  • دین و قرض
  • صلح
  • وکالت
  • صدقہ
  • عاریہ اور ودیعہ
  • وصیّت
  • غصب
  • بالغ ہونے کے علائم اور حَجر
  • مضاربہ
  • بینک
  • بیمہ (انشورنس)
  • سرکاری اموال
  • وقف
  • قبرستان کے احکام
700 /